ایف سی آر کے خلاف ہماری جدوجہد کسی سے ڈھکی چھپی بات نہیں, قاری عبدالمجید

JI-Amir-Qari-Majeed-Press-Confrenc.jpg

باجوڑ:جماعت اسلامی کے امیر قاری عبدالمجید نے باجوڑ پریس کلب میں میڈیا سیشن کیدوران اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ۔
قبائلی پٹی کیلئے جماعت اسلامی کے خدمات گزشتہ 40 سالوں پر محیط ہیں اور ایف سی آر کے خلاف ہماری جدوجہد کسی سے ڈھکی چھپی بات نہیں انہوں نے منتخب ارکان اسمبلی کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ عوام نے خان خوانین سےتنگ آکر متوسط طبقے سے نمائندگان منتخب کئے لیکن بدقسمتی سے وہ باجوڑ کے عوام کے مسائل بول چکے ہیں اور اب پارلیمنٹ لاجز میں کرکٹ کی پریکٹس میں مصروف یا صرف فوٹو سیشن تک محدود ہیں انہوں نے کہا کہ پچھلی حکومت نے فاٹا سے ایف سی آر کے خاتمے اور فاٹا کو خیبر پختونخوا سے مرجر کا جو اعلان کیا تھا موجودہ حکومت نے وہ ترامیم کا فیصلہ ردی کی ٹوکری میں ڈال دیا ہے اور عمران خان کے پیش کردہ سو دنوں کے پلیننگ میں فاٹا کا ذکر تک ہی نہیں
انہوں نے کہا کہ باجوڑ میں مہنگائی عروج پر ہے، ضلع ٹیکس تو ختم ہوا لیکن عوام کو ٹیکس خاتمے پر بھی کوئی ریلیف نہیں دیا گیا ۔
انہوں نے قبائلی علاقوں کیلئے بنائے گئے ٹاسک فورس کمیٹی کو بھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اس کمیٹی میں وہ لوگ شامل کئے گئے ہیں جو ایف سی آر کے کٹر حامی لوگ ہیں
انہوں نے موجودہ حکومت سے ایمرجنسی بنیادوں پر عدالتی نظام کو قبائل میں رائج کرنے کا بھی مطالبہ کیا
انہوں نے کہا کہ گزشتہ کئی دنوں سے ڈی سی کا سیٹ خالی پڑا ہے جس کیوجہ سے عوام کے مسائل حل نہیں ہورہے اس کیساتھ انہوں نے قبائلی اضلاع میں فوری طور پر بلدیاتی اور صوبائی الیکشن کرانے کا بھی مطالبہ کیا
انہوں نے یہ بھی کہا کہ باجوڑ لیویز فورس علاقائی امن و امان کو برقرار رکھنے کیلئے بنایا گیا ہیں لیکن بدقسمتی آج 13 سو لیویز فورس کے جوان علاقے سے باہر افسران کے گھروں میں کام کرنے پر مجبور ہیں اور ان جوانوں سے کچن اور ڈرائیور کا کام لیا جارہا ہیں چونکہ یہ سپاہی باجوڑ عوام کے بچے ہیں اور علاقائی امن وامان کیلئے بھرتی ہیں اس لئے انہیں دوبارہ باجوڑ واپس کئے جائے
انہوں نے موٹر سائیکل بندش پر عوام کو ذلیل کرنے کا سلسلہ فوری طور پر بند کرنے کا بھی مطالبہ کیا ۔

شئیر کیجئے

PinIt

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.