اعظم سواتی نے وفاقی وزیر کے عہدے سے استعفی دے دیا

CJP-and-Azam.jpg

وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی اعظم سواتی نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔

اعظم سواتی نے وزیراعظم عمران خان کو استعفیٰ پیش کر دیا جسے انہوں نے منظور کرلیا۔ اعظم سواتی کا کہنا تھا کہ موجودہ حالات میں قلمدان اپنے پاس نہیں رکھ سکتااور کام نہیں کرسکتا۔اعظم سواتی نے کہا کہ بغیر اتھارٹی کے اپنے کیس کا دفاع کروں گا۔

بدھ کے روز اسلام آباد آئی جی تبادلہ کیس میں سپریم کورٹ نے اعظم سواتی کا معافی نامہ مسترد کردیا تھا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ شعور اس وقت آئے گا جب سزا ملے گی۔ چیف جسٹس نے مزید ریمارکس دئیے کہ آرٹیکل 62 ون ایف کے تحت عدالت خود ٹرائل کرے گی، یہ بھی دیکھے گی کہ نیب قانون کے تحت کیا کارروائی بنتی ہے۔ چیف جسٹس نے یہ بھی کہا کہ ایک فون کال پر وزیراعظم نے آئی جی کا تبادلہ کردیا، کیوں نہ وزیراعظم کو بلا کر وضاحت لی جائے۔

عدالت نے اعظم سواتی کا پیسہ ڈیم فنڈ کیلئے لینے سے بھی انکار کردیا،چیف جسٹس نے کہا کہ ایک ارب پتی آدمی ایسے لوگوں سے مقابلہ کررہا تھا جن کے پاس دو وقت کی روٹی کھانے کے پیسے بھی نہیں تھے۔

چیف جسٹس نے مزید ریمارکس دئیے کہ کیا اعظم سواتی حاکم وقت ہیں،رعایا سے ایسا سلوک کرتے ہیں؟ بھینسوں کی وجہ سے کیا حاکم خواتین کو گرفتار کرواتا ہے؟ شعور اس وقت آئے گا جب سزا ملے گی، کیوں نہ اعظم سواتی کو ملک کیلئے مثال بنائیں۔

چیف جسٹس نے استفسار کیا تھا کہ تحریک انصاف نےاعظم سواتی کیخلاف کیا ایکشن لیا

شئیر کیجئے

PinIt

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.