کسی نے مہم جوئی کی تو منہ توڑ جواب دیا جائے گا، وزیر اعظم

0

پاک بھارت کشیدگی پر ملک کی سیاسی وعسکری قیادت ایک صفحے پر آگئی، وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت قومی سلامی کمیٹی کا طویل اجلاس ہوا جس میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باوجوہ سمیت تینوں مسلح افواج کے سربراہان کی شرکت کی ۔

سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں ملک کی داخلی و خارجی سلامتی کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا، تین گھنٹے جاری رہنے والی بیٹھک میں پاک بھارت کشیدگی پر تفصیلی مشاورت ہوئی، قیادت نے پلوامہ واقعے میں پاکستان کوملوث کرنے کی بھارتی کوششوں کی شدید مذمت کی ، ساتھ ہی مودی سرکار کو صاف پیغام دیاکہ ثبوت ہیں تو پیش کرے الزام تراشی برداشت نہیں ۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان نے ستر ہزار جانیں قربان کیں، بھارتی جارحیت اور مہم جوئی کا پاکستان کی مسلح افواج مؤثر جواب دیں گی ۔

اجلاس میں دفترخارجہ کے حکام نے عالمی عدالت انصاف میں جاری بھارتی جاسوس کلبھوشن یادو کیس پر بھی بریفنگ دی، کمیٹی نے مقبوضہ کشمیرمیں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی مذمت اور یورپی پارلیمنٹ کی رپورٹ کاخیرمقدم کیا۔

قومی سلامتی کمیٹی نے سعودی ولی عہد کے کامیاب دورہ کو پاکستان کی خوشحالی کا ذریعہ بھی قراردیا گیا، پڑوسی ملک افغانستان میں قیام امن کیلئے کوششیں جاری رکھنے کا عزم بھی دہرادیا۔

اعلامیہ میں بھارتی الزامات کو یکسر مسترد کیا گیا ہے، بھارت کو دو ٹوک الفاظ میں بتادیا گیا ہے کہ پلوامہ واقعے میں پاکستان کسی صورت ملوث نہیں، واقعے کی تحقیقات کیلئے مخلصانہ پیشکش بھی کی گئی ہے

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.