ہیڈ کوارٹر ہسپتال خار میں ڈاکٹروں نے اپنے مطالبات کے حق میں احتجاج ،تمام او پی ڈیز بند

باجوڑ : ہیڈ کوارٹر ہسپتال خار میں ڈاکٹروں نے اپنے مطالبات کے حق میں احتجاج تمام او پی ڈیز بند جسکی وجہ سے مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا ہے
صوبے کے دوسرے ہسپتالوں کی طرح باجوڑ کے سب سے بڑے سرکاری ہسپتال میں بھی تمام ڈاکٹر اپنے مطالبات کے لیئے احتجاج کررہے ہیں ہیڈکوارٹر ہسپتال کے جنرل او ،پی ،ڈی،چلڈرن او پی ڈی بشمول تمام او پی ڈیز میں کوئی ڈاکٹر موجود نہیں  ڈاکٹروں کے احتجاج سے سینکڑوں مریضوں کو انتہائی مشکلات کا سامنا ہے احتجاج میں شریک تمام ڈاکٹرز صوبائی حکومت سے آر ایچ اے، ڈی ایچ اے رولز اور ہسپتالوں کی نجکاری کا فیصلہ واپس لینے کا مطالبہ کررہے ان کا کہنا ہے کہ جب تک انکے مطالبات نہیں مانےجاتے تب تک احتجاج جاری رہیگا ۔
یاد رہے کہ ضلع باجوڑمیں اس بار پولیو ویکسین کیساتھ وٹامن اے کے ویکسین بھی بچوں کو دی گئ ہیں جس نے درجنوں بچوں میں ری ایکشن شن شروع کیا ہے قے او دست کے وجہ سے اب تک 82 بچوں کو ضلعی ہیڈکورٹر ہسپتال خار لایا گیا ہے جبکہ درجنوں بچوں کو تیمرگرہ اور پشاور منتقل کیا جا چکا ہے جس میں بعض کی حالت نازک بتائی جارہی ہیں ہسپتال کے او پی ڈی بند ہونے سے ان بچوں کا علاج متاثر ہورہا ہے ہسپتال میں ڈاکٹر نہ ہونے کے وجہ سے لواحقین نے بھی اپنے مریضوں کو احتجاجاًسڑک پر نکال دیئے جس سے ٹریفک جام کا مسئلہ بھی پیدا ہوا ضلعی انتظامیہ نے حالات پر قابو پانے کے لیئے ڈاکٹروں کیساتھ مذاکرات شروع کیی ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.