موجودہ حکومت نے عوام کو سبز باغات دکھا کر ملک کو تباہی کے دہانے پر لاکھڑا کیا ہے، مفتی عبدالشکور

0

با جوڑ-اسلام آباد ملین مارچ میں ماہ اکتوبر میں قبائلی اضلاع سے ہزاروں کی تعداد میں ورکرز، شرکت کریں گے ۔مفتی عبدالشکور
ان خیالات کا اظہار جمعیت علماء اسلام قبائلی اضلاع کے آمیر مفتی عبدالشکور نے چمن مدرسہ خار میں ایک بڑے ورکرز کنونشن سے خطاب کرتے ہوئے کیا

 انہوں نے کہا کہ اسلام آباد ملین مارچ کا فیصلہ آٹل ہے کیونکہ موجودہ حکومت نے عوام کو سبز باغات دکھا کر ملک کو تباہی کے دہانے پر لاکھڑا کیا ہے اور ہمارا دھرنا صرف اور صرف آئین کی بالادستی، اور نظریئے کے حفاظت کیلئے ہوگا

 انہوں نے کہا کہ پی، ٹی، آئی نے قبائلی اضلاع کے عوام سے نئے پاکستان کے نام پر ووٹ لیا لیکن یہ وضاحت نہیں دی کہ نئے پاکستان میں ہمارے دین اسلام اور عام شہری کی کیا حیثیت ہوگی ۔


انہوں نے مزید کہا کہ نئی حکومت نے نو ماہ میں 30 ہزار آرب کا قرضہ لیکر سن 71 کے بعد قرضوں کا ریکارڈ ٹوٹا، لیکن آج عام شہری کو کیا مل رہا ہے اور آج وہ قرض کے پیسے کس مد میں خرچ ہو رہے ہیں کیونکہ آج پہلے سے ٹیکسز اور قرضوں تلے دبے عوام آٹا، گھی، چاول اور دوائیوں کے حصول کیلئے سرگرداں ہیں ۔
تقریب سے مفتی اعجاز، شنواری، سابقہ ایم، این، اے غلام محمد صادق، مفتی عصمت الله، مولانا فتح الله، مولانا عصمت الله اورکزئی، مفتی اعجاز، پریس سیکرٹری آل سابقہ فاٹا مفتی جہاد شاہ،سینئر نائب صدر باجوڑ حاجی سید باشاہ، سابقہ امیدوار صوبائی اسمبلی احمد زیب خان، مولانا محمد فائق، حاجی آکبر جان، مولانا محمد عارف، سابقہ امیدوار صوبائی اسمبلی مفتی سلطان محمد و دیگر نے بھی خطاب کیا 

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.