باجوڑ-ڈبر میں ایک سال پہلے قائم مڈل سکول تاحال فعال نہ ہوسکا، بچے دوسرے علاقوں میں تعلیم حاصل کرنے پر مجبور

0

ڈبر ماموند  میں دوسال سے تعمیر سکول کے عمارت بند پڑی ہے جو خراب ہونے کا خدشہ

باجوڑ- ڈبر ماموند ہے تحصیل ماموند باجوڑ میں آبادی اور رقبے کے لحاظ سے سب سے بڑا تحصیل ہے ۔ علاقہ ڈبر تحصیل وڑ ماموند میں ایک سال قبل قائم کیاگیا گورنمنٹ مڈل سکول کو تاحال فعال نہیں کیا گیا۔ مذکورہ سکول کے بلڈنگ پر لاکھوں روپے خرچ کئے گئے لیکن تاحال سکول کو سٹاف فراہم نہیں کیاگیاہیں۔سکول فعال نہ ہونے کیوجہ سے علاقہ ڈبر کے بچے دوسرے علاقوں میں تعلیم کے حصول کیلئے جانے پر مجبور ہیں۔

علاقائی مشر  محمد یوسف خان آف بیلوٹ ماموند نے کہا کہ ممبران قومی و صوبائی اسمبلی سے اپیل ہے کہ اس مسئلے کی طرف پوری توجہ دے اور فوری طور  پر سکول کو سٹاف دے اور تعلیمی سلسلہ شروع  کیا جائے۔

انہوں نے صوبائی حکومت اور منتخب نمائندگان سے مطالبہ کیا کہ وہ اس مسئلے کے حل کیلئے اقدامات اٹھائیں اور سکول کو سٹاف فراہم کرکے علاقہ کے لوگوں کا دیرینہ مطالبہ پورا کیاجائے۔

علاقے کے لوگوں نے ممبر قومی اسمبلی گل ظفر خان سے مطالبہ کیا کہ  اس اہم مسئلہ کے طرف توجہ دے اور ہمارے بچوں کے مستقبل تباہی سے بچائے ۔
یاد رہے کہ گزشتہ روز کمیونٹی سکولوں کے اساتزہ کے جانب باجوڑ پریس کلب کے سامنے اپنے مطالبات کیلئے احتجاج بھی کیا گیا تھا ۔مظاہرین کا کہنا تھا کہ  باجوڑ میں 92کمیونٹی سکول ان میں 209اساتذہ ہزاروں بچوں کو تعلیم فراہم کررہے ہیں   انہوں نے کہا کہ اگر آئندہ چند ہفتوں میں ہمارے مطالبات پر عمل نہیں کیا گیا اور ہمیں ریگولرائز نہیں کیا گیا تو ہم نومبر کے آخر میں اسلام آباد جائیں گے اور ڈی چوک میں تاریخی دھرنا دیں گے ۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.