ضلع دیر جندول۔ شاہی۔ بن شاہی اس جدید دور میں بھی ٹیلی مواصلات کی سہولت سے محروم

0

ضلع دیرـ لویر دیر کے تحصیل ثمر باغ کے متعدد  سیاحتی اور خوبصورت علاقے جن میں جندول اور شاہی جو کہ پاکستان- افغانستان کے سرحد پر واقع ہے اس جدید دور میں بھی ٹیلی مواصلات یعنی ٹیلی فون اور موبائل فون سروس سے محروم ہے ۔

  جندول سے تعلق رکھنے والے ملاکنڈ یونیورسٹی کے طالب علم پیر محمد سواتی نے بتایاکہ  تحصیل ثمر باغ کے بیشتر علاقے  بالخصوص پاکستان افغانستان سرحد کے قریب واقع علاقے جن میں جندول ۔ شاہی۔ بن شاہی وغیرہ شامل ہیں

  اس جدید دور میں جب ٹیلی فون اور انٹر نیٹ کی وجہ سے دنیاء ایک گلوبل ویلج بن گیاہے مذکورہ بالا علاقوں کے ہزاروں لوگ ٹیلی مواصلات کی اس بنیادی ضرورت سے محروم ہیں ۔

 پیر محمد سواتی

 پیر محمد سواتی نے کہاکہ مذکورہ علاقوں کے لوگ اندرون ملک اور بیرون ممالک اپنے رشتہ داروں اور دوست احباب کے ساتھ رابطے کے لیے پی ٹی سی ایل کے وائرلیس فون سروس استعمال کرتے تھے لیکن بدقسمتی سے پی ٹی سی ایل کے وائرلیس فون سروس کئی ماہ سے کام نہیں کررہے ہیں

جس کی وجہ سے علاقہ کے ہزاروں لوگوں کا اندرون ملک اور بیرون ممالک اپنے عزیزو اقارب اور دوست احباب کے ساتھ رابطہ مکمل طور پر منقطع ہوگیاہے جس کی وجہ سے لوگوں کو بہت پریشانی کا سامناہے۔

 پیر محمد سواتی نے  مزید بتایاکہ پی سی ایل کے وائرلیس سروس کی بندش سے علاقہ کے سینکڑوں طلباء اور طالبات جوکہ ملک کے مختلف شہروں کے یونیورسٹیوں اور کالجوں میں زیر تعلیم ہیں کا اپنے گھر والوں سے رابطہ بھی نہیں ہورہاہے ۔

 پیر محمد سواتی کا کہنا تھا کہ  تحصیل ثمر باغ کے سرحدی علاقے جو قدرتی خوبصورتی میں اپنی مثال اپ ہیں میں  ٹیلی مواصلات کے سہولیات کی عدم دستایبی کی وجہ سے علاقہ کے معاشی اور سماجی صورتحال پر انتہائی منفی اثرات مرتب ہورہے ہیں ۔ ۔

انھوں نے مطالبہ کیا کہ علاقہ میں نہ صرف پی ٹی سی ایل کے وائرلیس سروس بحال کی جائے ساتھ ہی ان علاقوں میں موبائل فون اور موبائل انٹرنیٹ سروس بھی شروع کی جائے تاکہ اس جنت نظیر علاقے میں سیاحت کو فروغ مل سکیں ۔

انھوں نے کہاکہ موبائل فون اور موبائل انٹرنیٹ سروس کی فراہمی سے علاقہ کی سماجی اور معاشی صورتحال پر انتہائی اچھے اثرات مرتب ہوں گے ۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.