جے یو آئی ، کال پر پلان سی کے تحت متحدہ اپوزیشن کا غلنئی میں احتجاجی مظاہرہ

0

ضلع مہمند –(سلیمان خان مہمند )ضلع مہمند میں جے یو آئی کی کال پر پلان سی کے تحت متحدہ اپوزیشن کا ضلعی ہیڈ کوارٹر غلنئی میں حکومت کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔ ناروے میں قرآن پاک بے حرمتی کی بھی مذمت، حکومت ناروے سے تعلقات ختم کرنے کا مطالبہ۔مہنگائی میں آئے روز اضافہ اور معیشت ڈوبنے کو ہے۔ قبائلی اضلاع کے معدنیات پر قبضے کی کوشش ہو رہی ہے۔ انضمام اور مہمند ڈیم کے وعدے پورے کئے جائے۔ حکومت ناکام ہو چکی ہے۔ جعلی مینڈیٹ کی حکومت گرا کر دم لینگے۔ ہفتہ وار احتجاج شروع کرنے کا اعلان۔

 ان خیالات کا اظہار ہفتہ کے روز قبائلی ضلع مہمند کے ہیڈ کوارٹر غلنئی میں جمعیت علمائے اسلام کی کال پر پلان سی کے مطابق احتجاجی مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے جے یو آئی ضلع مہمند کے امیر مولانا محمد عارف حقانی، پی کے 103 ایم پی اے اور صدر اے این پی نثار مہمند، پی پی پی مہمند کے صدر ڈاکٹر فاروق افضل، سابقہ ایم این اے مولانا غلام محمد صادق، مہمند ویلفیئر آرگنائزیشن کے صدر میر افضل مہمند، حضرت خان مہمند اور دیگر نے کیا۔

 انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے قبائلی عوام کی مشکلات میں مزید اضافہ کر دیا ہے۔ قبائلی اضلاع کے انضمام کے دوران قبائلی عوام کے ساتھ ترقی اور بھاری فنڈز کے وعدے جھوٹے ثابت ہوئے۔ عوام کو ریلیف دینے کی بجائے اُلٹا قبائلی اضلاع کی معدنیات اور قدرتی ذخائر پر صوبائی حکومت کی نظریں لگی ہوئی ہے۔

 گزشتہ دنوں صوبائی اسمبلی میں ضم شدہ اضلاع معدنیات بل پاس کر کے قبضے کا آغاز کر دیا ہے۔ جس سے قبائلی عوام میں مایوسی پھیل رہی ہے۔ مقررین نے کہا کہ ورسک ڈیم کی طرح مہمند ڈیم کے مراعات اور جائز حقوق بھی سلب کی جا رہی ہے۔ اس لئے حکومت ہوش کے ناخن لیکر ایسے اقدامات واپس لے۔

انہوں نے کہا کہ مہنگائی، غربت اور بے روزگاری کی شرح میں اضافے سے حکومت کی نااہلیت واضح ہو چکی ہے۔ اور ضلع مہمند میں متحدہ اپوزیشن ہفتہ وار احتجاج شروع کرنے کا اعلان کرتا ہے۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.