جمرود کے ددور افتادہ علاقے راجگل کوکی خیل میں عسکریت پسندوں کے خلاف فوجی اپریشن شروع

0

نا مہ نگار (ساجد علی )فوج کے تعلقات عامہ ادارے ائی ایس پی ار کے مطابق منگل کے روز خیبرایجنسی کے تحصیل جمرود کے دور افتادہ علاقے وادی تیراہ راجگل میں سیکورٹی فورسز نے زمینی اپریشن خیبر تھری شروع کرکے پیش قدمی شروع کردی ہے ۔وادی تیراہ راجگل تحصیل جمرود کا دور افتادہ پہاڑی علاقہ ہیں جہاں پر کافی جنگلات اور بلند پہاڑموجود ہیں فورسز نے میدا ن کی طرف سے پیش قدمی شروع کرکے بارڈر تک زمینی اپریشن شروع کردی ہیں۔سیکورٹی فورسز ذرائع نے بتایا کہ اپریشن کا مقصد علاقہ کو عسکریت پسند تنظیموں سے خالی کراکے بارڈر کو سیل کرکے ان کی نکل و حرکت کو کنٹرول کرنا ہیں ۔راجگل تیراہ افریدی قبیلے کے ذیلی شاخ کوکی خیل قبیلے کا علاقہ ہے جن کی سرحد پڑوسی ملک افغانستان کے علاقے ننگرہار سے ملی ہوئی ہیں جہاں پر مختلف عسکریت پسند تنظمیں تحریک طالبان ،لشکر اسلام اور دوسرے تنظیموں کا مسکن ہیں ۔واضح رہے کہ تین سال پہلے عسکریت پسند تنظیموں نے اس علاقے پر حملہ کرکے یہاں پر قبضہ کرلیا جس کے بعد تیس ہزار سے زائد کوکی خیل قبیلے کے افراد اپنے گھر بارچھوڑ کر جمرود میں پرامن علاقوں اور پشاور کے طرف نکل مکانی کی جہاں پر کسمپرسی کی زندگی گزارنے پر مجبور ہیں ۔وادی تیراہ سے نکل مکانی کرنے والے قبائیلی مشر مولانہ نور مراز کوکی خیل نے بتایا کہ وادی تیراہ پر عسکریت پسندوں کے قبضے کے بعد اور وہاں پر فضائی اپریشن و بمباری کے خوف سے تین سال پہلے تیس ہزار سے زائد کوکی خیل قبائیل نے نکل مکانی کی تاہم ابھی تک متاثرین کا درجہ نہیں دیا گیا اور نہ ان کی کوئی مدد کی گئی ۔انہوں نے بتایا کہ نکل مکانی کے بعد لڑائی اور فضائی اپریشن کی وجہ سے ان کے گھر جبکہ ان کی زراعتی زمین بھی تباہ ہوچکی ہیں اس لیے ان کے نقصانات کا ازالہ کرکے نکل مکانی کرنے والے خاندانوں کی مدد کی جائے جو ان کا جائز حق ہیں ۔کوکی خیل قبائل نے متاثرین کے حوالے سے پیر کے روز تحصیل جمرود میں ایک گرینڈ جرگے بھی طلب کیا ہیں جو کہ ائندہ کا لائحہ عمل طے کریں گی ۔

An Operation has been launched along Pak-Afghan border to reinforce troops deployment in Rajgal valley to effectively…

Posted by ISPR on Monday, August 15, 2016

 

https://www.youtube.com/watch?v=mq8TyWHTHas

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.