روہنگیا مسلمانوں کے نسل کشی کے خلاف جماعت اسلامی کا مظاہر

0

باجوڑایجنسی (معاذ خان) باجوڑ ایجنسی میں روہنگیا مسلمانوں کے نسل کشی کے خلاف جماعت اسلامی کا مظاہرہ۔تفصیلات کے مطابق باجوڑ ایجنسی کے دوسرے بڑے تجارتی مرکز عنایت کلی میں جماعت اسلامی کا برما مسلمانوں کے پر ظلم و ذیادتی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس میں جماعت اسلامی خیبر پختونخواہ کے نائب امیر صاحبزادہ ہارون الرشید ،فاٹا کے امیر حاجی سردار خان، باجوڑ کے قائم مقام امیر حمید صوفی،الخدمت فاؤنڈیشن فاٹا کے صدر مولانا وحید گل ،شعبہ تعلقات عامہ باجوڑ کے صدر الحاج عظیم خان ماموند ،جماعت اسلامی کے سیکرٹری اطلاعات خلیل اللہ جان و دیگر قائدین سمیت جماعت اسلامی کے کارکنان اور اسلامی جمعیت طلبہ سینکڑوں کارکنان نے شرکت کی ۔اس موقع پر مقررین نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ برما میں مقیم روہنگیا مسلمانوں کے خلاف انسانیت سوز مظالم جاری ہے اور مسلمانوں کی بچے زبح کئے جا رہے ہیں خواتین کی عظمت دری کی جا رہی ہے اور ہزاروں مسلمانوں کے گھروں اور محلوں کو نذر آتش کئے جا رہے ہیں جو انسانی حقوق کے مکمل خلاف ورزی اور وحشیانہ جرم ہے اس طرح کا برتاؤ کوئی جانوروں کیساتھ بھی روا نہیں رکھتا عالمی رہنماؤں اور انسانی حقوق کے علمبرداروں کے مجرمانہ خاموشی معنی خیز ہے مقررین نے یہ بھی کہا کہ برمی مسلمانوں کے قتل عام میں بھارت اور امریکہ برابر کے شریک ہیں کیونکہ ان دونوں ملکوں نے آج پورے خطے کو عدم استحکام سے دوچار کیا ہوا ہے اُنہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی ہر فورم پر اس ظلم و جبر کے خلاف آواز اُٹھائی گی اور برما مسلمانوں کیساتھ اظہار یکجہتی کیلئے پورے فاٹا میں مظاہروں کا آغاز کیا جائے گا اس موقع پر مظاہرین نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا پتلا نظر آتش کیا اور آنگ سانگ سو چی سے بین الاقوامی نوبل انعام واپس لینے کا مطالبہ کیا اور بھارت اور نیرند مودی کے خلاف نعرہ بازی کی

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.