باجوڑ :ناواگئ ڈگری کالج کے پرنسپل مقامی طلبا ء کو فرسٹ ائیر میں داخلہ دینے سے انکاری

ناواگئ ضلع باجوڑ:حکومت پاکستان کی جانب سے خطیر رقم  کی لاگت سے علاقہ زوربندر میں  نئے تعمیرشدہ  گورنمنٹ ڈگری کالج ناواگئ کے قائم مقام پرنسپل عبدالحق علاقہ کےمقامی طلبا ء کو سال اول میں داخلہ دینے سے انکاری  ہے۔ تفصیلات کے مطابق پچاس سے زیادہ طلباء نے باجوڑ ٹائم سے رابطہ کرکے بتایا کہ مذکورہ پرنسپل طلباء سے داخلہ فارم جمع کرنے سے انکار کر رہے ہیں ،حالانکہ داخلہ فارمز جمع کرنےکی آخری تاریخ رواں مہینے (اگست)کی 17 تاریخ  تک  ہے۔ طلباء نے حکام  بالا سے اس مسئلے کا فورا َنوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ اور ڈی سی باجوڑ عثمان مسعود سے درخواست کی ہے کہ پرنسپل گورنمنٹ ڈگری کالج  ناواگئ کو بلا کر  فی الفور ان سے اس زیادتی کی وضاحت طلب کی جائے۔تا کہ اس جنگ زدہ اور پاسماندہ علاقے کے طلبا ء کی  تعلیمی سرگرمیاں مزید متاثر نہ ہو۔یاد رہے کہ ناواگئی  صوبہ خیبر پختونخواہ  کے سابقہ گورنر  اینجنئر شوکت اللہ کا آبائی علاقہ اور سیاسی مھمات کا محور رہا ہے لیکن بدقسمتی سے یہاں  کے مکینو ں کیلئے تعلیم تک رسائی میں ہمیشہ سے مشکالات کا سامنا رہا ہے ۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.