’’د رنڑا ملگری‘‘کے زیراہتمام پیرروشان کی زندگی اور تحریک پر 24واں سٹڈی سرکل کا انعقاد

0

باجوڑ-د رنڑا ملگری تنظیم کے زہراہتمام ’’پیر روشان ‘‘ کے زندگی اور روشانی تحریک پر سٹڈی سرکل کا انعقاد کیا گیاتھا جس میں کثیر تعداد میں ضلع باجوڑ سے علم و ادب کے متوالیوں نے شرکت کی، سٹڈی سرکل کا مقرر باجوڑ کے نامور قام پرست اور دانشور مولانا خانزیب تھا.

مولانا خانزیب نے پیر روشان کے زندگی اور تحریک پر لیکچر دیتے ہوئے کہا کہ پیروروشان نے پشتون قوم کو مغل کے خلاف متحد کرنے میں شب وروز جدوجہد کیا تھا .

انہوں نے کہا کہ پیر روشان پہلے آدمی تھا جس نے روایتی تصوف کا راستہ ترک کرکے تصوف کو نئے اُصولو پر استوار کیا، انہوں نے کہا کہ پیر روشان پہلے آدمی تھا جس نے کو ایجوکیشن متعارف کیا تھا،انہوں نے کہا کہ پیر روشان پشتو موسیقی سے بھی محبت کرتا تھا اور اس نے اپنے تصوف میں موسیقی کو حلال قرار دیا تھا ، انہوں نے کہا کہ پیرروشان نے موسیقی کے ایک راگ کا اختراع بھی کیا تھا.

انہوں نے کہا کہ پیر روشان نے پشتون اتحاد کیلئے مذہب کا راستہ اختیار کیا اور اس طریقے سے پشتون قوم کو مغل کے خلاف ایک سیسہ پلائی ہوئے دیوار کے طرح کھڑا کیا، مولانا خانزیب نے کہا کہ ہمارے نوجوانوں کو چاہیے کہ اپنے قومی تاریخ سے اپنے آپکو آگاہ کریں.

انہوں نے کہا کہ اپنے تاریخ کے اچھی اور بُری دونوں رُخ کو مدنظر رکھتے ہوئے مستقبل کیلئے لائحہ عمل طے کیا جائے، سٹڈی سرکل کے آخری میں شرکاء نے مختلف سوالات بھی اُٹھائی، جس کے مولانا خانزیب نے مدلل جوابات دے دیں

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.