نادرا نے حافظ حمداللہ کی پاکستانی شہریت منسوخ کردی

0

اسلام آباد-نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی(نادرا) نے جمعیت علمائے اسلام(ف) کے مرکزی رہنما اور سابق سینیٹر حافظ حمداللہ غیرملکی شہری قرار دیتے ہوئے پاکستانی شہریت منسوخ کردی، جس کے بعد پیمرا نے انہیں پاکستانی ٹی وی چینلز پر بلانے پر پابندی عائد کردی۔

پاکستان الیکٹرانک میڈیا ریگولیٹری اتھارٹی(پیمرا) کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن میں حافظ حمداللہ کو ٹی وی چینلز پر بلانے پر پابندی عائد کی گئی۔

پیمرا کی جانب سے اپنے اس اقدام کی وضاحت کرتے ہوئے بتایا گیا کہ نادرا نے اپنے حکم نامے میں شناختی کارڈ منسوخ کرتے ہوئے حافظ حمداللہ صبور کو جاری کمپیوٹرائزڈ قومی شناختی کارڈ ڈیجیٹل طور پر ضبط کرلیا۔

پیمرا کے نوٹیفکیشن میں کہا گیا کہ حافظ حمداللہ غیر ملکی ہیں اور پاکستانی شہری نہیں ہیں لہٰذا تمام ٹی وی چینلز کو ہدایت کی جاتی ہے کہ وہ حافظ حمداللہ کو ٹی وی پر بلانے اور ان کی تشہیر سے گریز کریں۔

پیمرا نے کہا کہ یہ فیصلہ اعلیٰ حکام کی اجازت کے بعد کیا گیا ہے۔

نادرا اور پیمرا کی جانب سے یہ اقدام ایک ایسے موقع پر کیا گیا ہے کہ جب جمعیت علمائے اسلام(ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمٰن کی جانب سے31اکتوبر کو ہونے والے ‘آزادی مارچ’ میں چند دن باقی ہیں اور اس قدم سے حکومت اور جے یو آئی(ف) کے درمیان پہلے سے خراب تعلقات مزید کشیدہ ہو سکتے ہیں

واضح رہے کہ جمعیت علمائے اسلام(ف) کے رہنما اور سابق سینیٹر حافظ حمداللہ اپنی جماعت کے متحرک رہنماؤں میں سے ایک ہیں اور ٹی وی چینلز پر اپنے جارحانہ بیانات کی وجہ سے شہرت رکھتے ہیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.