باجوڑ- منتخب نمائندگان سرکاری کاموں میں محکموں سے 25% فرسنٹ کے مطالبات کر رہے ہیں , جماعت اسلامی

0

باجوڑ -جماعت اسلامی کے قائدین حاجی سردار خان، مولانا وحید گل، محمد حمید صوفی، ودیگر ایم۔پی۔اے سراج الدین خان کے ہمراہ پریس کانفرنس کر رہے ہیں ۔
اس موقع پر ممبر صوبائی اسمبلی سراج الدین خان نے کہا ہے کہ موجودہ حکومت نے مجھ سمیت کسی بھی ایم، این، اے کو ترقیاتی کاموں کیلئے فنڈ ریلیز نہیں کیا ہے لیکن بدقسمتی سے منتخب نمائندگان افتتاح پر افتتاح کئے جا رہے ہیں جو سمجھ سے بالاتر ہے۔
انہوں نے کہا کہ سرکاری محکمے اگر مزید اسی طرح کے اقدامات کرتے ہیں تو ان کے خلاف عدالت کا دروازہ کھٹکھٹائیں گے ۔
انہوں نے مزید کہا کہ جماعت اسلامی معاشرے میں ہر قسم کی کرپشن کے خلاف ہے اور اگر منتخب نمائندے اس قسم کے اوچھے ہتھکنڈوں سے باز نہیں آئے تو عوامی عدالت میں گسیٹھے گے ۔
اس موقع پر آمیر جماعت اسلامی مولانا وحید گل نے کہا کہ باجوڑ میں بد امنی کیساتھ کرپشن انتہاء کو پہنچ چکا ہے اور منتخب نمائندگان سرکاری کاموں میں محکموں سے 25% فرسنٹ کے مطالبات کر رہے ہیں جو شرم کی بات ہے ۔
انہوں نے باجوڑ میں بھتہ خوری اور معززین کو ٹیلیفون کالز کے ذریعے بھتہ مانگنے کی بھی مذمت کی اور کہا کہ اگر اس سلسلے کو بند نہ کیا گیا تو احتجاج کریں گے ۔

دوسری جانب  پی ٹی آئی صوبائی اسمبلی کے  نامزد امیدوار ڈاکٹر حمید نے سوشل میڈیا پر سٹیمنٹ جاری کرتے ہوئے  کہ ممبر صوبائی اسمبلی سیراج الدین خان  شریف لوگوں کو دھمکانے کیلئے اینٹی سٹیٹ قوتوں کا سہارا لیتے ہیں جس کے ثبوت بھی موجود ہے  انکے مطابق ممبر صوبائی اسمبلی سیراج الدین  اربوں روپے کے منی لانڈرنگ کی اور ابھی بھی ایف بی آر کے ساتھ کیس چلا آرہا ہے ۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.