داستان_حج1440ھ قسط۔ (2)

0

حج پالیسی 2019۔

پاکستان میں نئی حکومت کی آمد سے مہنگائی کی بدترین طوفان آگیا، ڈالر کی مقابلے میں روپیہ روزانہ گررہی تھی۔ حکومت مہنگائی کی جن کو کنٹرول کرنے کیلئے ھر چیز کی قیمتوں میں اضافہ کرتی۔ لیکن حج کے بارے میں کسی کا خیال نہ تھا کہ وہ بھی حکومت کی ناکام معاشی پالیسی کا شکار بنی گی۔ اور اس کی اخراجات میں بیک وقت (176000) روپے اضافہ کیا جائے گا۔ یعنی امسال حج داخلہ، گذشتہ سال(280000) کے مقابلے میں (456424) روپے ہوگی۔ حج پالیسی اعلان ہوتے ہی عوام اور حزب اختلاف کی یکساں ھدف تنقید بن گئی۔ سینٹ میں اس پر تحریک التواء بھی جمع کی گئی، لیکن حکومت اپنی بات پر قائم رہی۔ کئی لوگ جنہوں نے گذشتہ خرچ کے مطابق حج کیلئے منصوبہ بندی کیاتھا، اب ایکھ لاکھ ستر ھزار کی اضافی بوجھ برداشت نہ کرتے ہوئے مایوس ہوکر اپنے ارادے سے دست بردار ہوئے۔ یہی وجہ تھا کہ حج درخواستیں جمع کرنے کی آخری تاریخ میں دو دفعہ توسیع کی گئی اور تین مرتبہ قرعہ اندازی ہوئی۔

ایسے حالات میں ھماری خواب و خیال میں بھی نہ تھا کہ امسال حجاج کرام کی لسٹ میں ھمارا نام بھی لکھا ہواہے۔ تا ہم ھماری شوق، دعائیں اور اللہ تعالی کی بے پایاں فضل تھی جن کی بدولت ہمیں یہ عظیم اعزاز حاصل ہوئی۔

حج داخلہ اور قرعہ اندازی:-

پہلی ڈیڈ لائن ختم ہوئی لیکن ابھی تک ھم نے داخلہ نہیں کیا۔کیونکہ زادراہ کا کوئی بندوبست ہی نہیں تھا۔ میرے پاس کل جمع پونجی نقد اور قرض کل ملا کے بمشکل دو لاکھ بنتی تھی۔ لیکن میرا چچا حاجی حمدالله بضد تھے کہ داخلہ ضرور کرتے ہیں، پیسے جو کم ہوئی ساتھیوں سے لیں گے۔ بالآخر ان کی اصرار سے مجبور ہوکر 9 مارچ 2019 بروز ھفتہ آخری دن، جب بینک صرف حج داخلوں کی واسطے کھلے تھے، ھم خار چلے گئے اور پیسوں کا بندوبست کرکے حج فارم داخل کئے۔ اکثر لوگوں سے سنتے کہ جب بلاوا آجائے تو وسائل کا انتظام خود بخود ہوتا ہے۔ آج ھمیں ثابت ہوئی کہ واقعی اسباب بنانے والا صرف اللہ کی ذات ہیں۔

ٹھیک تین دن بعد 12 مارچ کو قرعہ اندازی ہوئی اور عصر 5 بجے وزارت حج کی جانب سےکامیابی کی اطلاع اور مبارکباد موصول ہوئی۔ پہلے تو یقین نہ آتاکہ ھمیں بھی ”ضیوف الرحمن” میں شامل ہونے کی اعزاز حاصل ہوئی ہے، یہ ایک خواب و خیال معلوم ہوتا۔ چند دن بعد حج تربیتی پروگرامات میں شرکت کی دعوت نامے موصول ہونے لگے۔ میں نے حج و عمرہ کی بعض اھم کتابوں کا مطالعہ بھی شروع کیا۔ یوں ذہنی طور پر اس مبارک سفر کیلئے تیاری کرنے لگا۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.