ملاگوری :کرونا وائرس کے باعث معمولات زندگی شدیدمتاثر، مقامی لوگوں میں شدید بے چینی

0

ملاگوری (محمد زاہد ملاگوری )

ملاگوری میں کرونا وائرس کے باعث معمولات زندگی شدیدمتاثرجبکہ حکومت کی جانب سے کی قسم کی ریلیف نظر نہیں آرہی ہے جس کی وجہ سے مقامی لوگوں میں شدید بے چینی پائی جارہی ہے جبکہ عوام فاقوں پر مجبور ہیں۔ اس حوالے مقامی ماربل فیکٹریوں کے مالکان ، مزدوروں اورٹرک ڈرائیوروں نے میڈیا کو بتایا کہ ان کے ماربل فیکٹریوں میں ہزاروں مزدور محنت کرکے اپنے بچوں کےلئے 2وقت کی روٹی کماتے تھے مگر ان کارخانوں میں چٹانیں ختم ہونے کے باعث وہ بے روزگار ہوگئے ہیں اور ان کے ذریعہ آمدن کا کوئی ذریعہ نہیں ہے۔ انہوں نے بتایا کہ کرونا کے باعث ان ماربل کارخانوں کے لئے چٹان لانے والے ٹرکوں کی آمد ورفت بند کر دی گئی ہے اور کارخانوں میںموجود اسٹاک ختم ہو کر رہ گئی ہے جبکہ ان کارخانوں کو چلانے کےلئے چٹان لانے کےلئے ٹرکوں کو تمام راستے بند پڑ ے ہیں ۔جبکہ تیار شدہ مال کی خرید بھی بند ہوگئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ان ماربل فیکٹریوں کی کرونا وائرس سے بندش کے باعث ان ہزاروںفیکٹریوں مالکان، مزدوروں اور ڈرائیورکا یومیہ کروڑوں روپیہ کا نقصان ہورہاہے جبکہ حکومت کی جانب سے انہیں کسی قسم ریلیف نہیں ملی ہے۔ مقامی مزدورں نے بتا یا کہ وہ دیہاڑی کے عرض سے اپنے گھروں سے نکلتے ہیں مگر کاروباری سرگرمیاں بند ہونے باعث خالی ہاتھ واپس اپنے گھروں کو لوٹ جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے نظراندازی پر ان میں شدیدبے چینی پائی جارہی ہے۔ مقامی لوگوں نے حکام بالا سے مطالبہ کیا کہ قوم ملاگوری کے عوام کی حالت زار پررحم کی جائے اور انہیںخصوصی ریلیف دی جائیں تاکہ ان کے مشکلات میں کمی آسکیں۔

شاید آپ یہ بھی پسند کریں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.